کراچی: گذشتہ روز ملاقات میں آئی پی سی اسپورٹس کمیٹی کے رکن اقبال محمد علی نے اس حوالے سے انھیں ابتدائی معلومات فراہم کردیں، ان کا کہنا ہے کہ میں اس حوالے سے خط بھی تحریر کروں گا، یہ بیحد حساس معاملہ ہے، اسے قومی اسمبلی کے اجلاس میں بھی اٹھایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق رواں برس پی ایس ایل 5 کی ایک غیرملکی جوئے کی ویب سائٹ پر لائیو اسٹریمنگ ہوئی، نمائندہ ’’ایکسپریس‘‘ نے نشاندہی کی تو پی سی بی نے غلطی تسلیم کر لی، ساتھ میڈیا پارٹنر کو اس کا قصوروار قرار دیا،اب اس تنازع کی باز گشت وزیر اعظم عمران خان تک پہنچ گئی ہے۔

آئی پی سی اسپورٹس کمیٹی کے رکن اقبال محمد علی نے اس حوالے سے انھیں ابتدائی معلومات فراہم کردیں، نمائندہ ’’ایکسپریس‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے قومی اسمبلی اورپبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے رکن نے کہا کہ گزشتہ روز وفد کے ہمراہ میری وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات ہوئی، دیگر معاملات پر گفتگو کرنے کے بعد میں نے کرکٹ کی جانب توجہ مبذول کرائی، میں نے انھیں بتایا کہ ایک جوئے کی ویب سائٹ پر پی ایس ایل کے میچز لائیو اسٹریم ہوئے، یہ جان کر وہ حیران رہ گئے۔

اس پر وہاں موجود سیکریٹری نے ان سے کہا کہ چونکہ ایسا ملک سے باہر ہوا اس لیے آپ کو آگاہ نہیں کیا گیا، میں نے انھیں بتایا کہ چیئرمین پی سی بی احسان مانی پہلے تو تردید کرتے رہے پھر تسلیم کر لیا کہ میڈیا پارٹنر نے بغیر بتائے جوئے کی کمپنی کو حقوق فروخت کیے۔

اقبال محمد علی نے مزید کہا کہ چونکہ کورونا و دیگر مسائل کی وجہ سے وزیر اعظم مصروف ہیں شاید اس لیے وہ اتنے اہم معاملے سے لاعلم تھے، میں نے ان سے یہ بھی کہا کہ پی ایس ایل ون اور ٹو کی آڈٹ رپورٹ سمیت پی سی بی کے حوالے سے ایک دستاویز پر آپ سے بات کرنی ہے، چونکہ وقت کم  تھا اس لیے  ایسا نہ ہو سکا، انھوں نے کہا کہ میں اب وزیر اعظم کو ایک خط بھیج کر تمام تفصیلات سے آگاہ کروں گا، لائیو اسٹریمنگ کا معاملہ قومی اسمبلی کے اجلاس میں بھی اٹھایا جائے گا۔